28

اگر کسی وجہ سے مال ضائع ہو جائے تو کیا پھر بھی صدقۂ فطر دینا ہو گا؟صدقۂ فطر کس کو دے سکتے ہیں؟

سوال: اگر کوئی غیر مسلم عید کی رات مسلمان ہوا تو کیا اس کو بھی فطرہ دینا واجب ہے؟📙
جواب:۞☜︎︎︎جی ہاں۔ (الفتاوی الھندیہ)

سوال: اگر کسی وجہ سے مال ضائع ہو جائے تو کیا پھر بھی صدقۂ فطر دینا ہو گا؟📗
جواب:۞☜︎︎︎ اگر صدقۂ فطر واجب ہونے کے بعد مال ہلاک ہو جائے تو پھر بھی دینا ہو گا ، کیونکہ زکوۃ و عشر کے برخلاف صدقۂ فطر ادا کرنے کے لیے مال کا باقی رہنا شرط نہیں۔(در مختار)🌹

سوال: اگر شوہر نے بیوی یا بالغ اولاد کی اجازت کے بغیر ان کا فطرہ ادا کر دیا تو کیا ان کا صدقہ فطر ادا ہو جائے گا؟*📕
جواب:۞☜︎︎︎جی ہاں (در مختار)

سوال: صدقۂ فطر کس کو دے سکتے ہیں؟🧡••••••••❥︎
جواب:۞☜︎︎︎ صدقۂ فطر کے مصارف وہی ہیں جو زکوۃ کے ہیں، یعنی:
① فقیر ،② مسکین ،③ عامل ،④ اِرقاب ،⑤ غارِم(مقروض) ،⑥ فی سبیل اللہ ،⑦ ابن سبیل (یعنی مسافر). (الفتاوی الھندیہ)

سوال: کیا سیّد کو صدقۂ فطر دے سکتے ہیں؟
جواب:۞☜︎︎︎ نہیں ، سید کو صدقۂ فطر نہیں دے سکتے۔(در مختار)

سوال: کیا جامعات ، مدارس ، اور دارالعلوم کو صدقۂ فطر دے سکتے ہیں؟🦚
جواب: ۞☜︎︎︎جی ہاں ، صدقۂ فطر حیلہ شرعی کے بعد مدارس و جامعات اور دیگر دینی کاموں میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔(فتاوی امجدیہ)
꧁🌺꧁🌸꧂🌻꧁🌹꧂

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں