30

کیا عورت اعتکاف کے دوران اپنا کھانا پکانے کے لیے کچن میں جا سکتی ہے؟ اگر عورت کو حیض آجائے تو کیا اس کا اعتکاف ٹوٹ جائے گا؟

سوال: کیا عورت اعتکاف کے دوران اپنا کھانا پکانے کے لیے کچن میں جا سکتی ہے؟♥️⁦❥
جواب: عورت کے لیے کھانا پکانے والا کوئی نہ ہو تو اگر مسجدِ بیت میں کھانا پکانا ممکن ہو تو وہ مسجد بیت میں کھانا پکائے گی، اور اگر مسجد بیت میں کھانا پکانا ممکن نہ ہو تو وہ کھانا پکانے کے لیے کچن میں جا سکتی ہے۔(تفہیم المسائل)⭐

سوال:کیا عورت فرض غسل کے علاوہ صرف ٹھنڈک حاصل کرنےکے لیے مسجدِ بیت سے باہر نکل کر غسل کر سکتی ہے؟🔸🧡🔸
جواب: عورت فرض غسل کے علاوہ صرف ٹھنڈک حاصل کرنے کے لیے مسجد بیت سے باہر نکل کر غسل نہیں کر سکتی، اگر اس کے لیے مسجدِ بیت سے باہر نکلے گی تو اس کا اعتکاف ٹوٹ جائے گا، البتہ مسجدِ بیت میں ٹھنڈک حاصل کرنے کے لیے غسل کر سکتی ہے۔(فتاویٰ اہلسنت)
🟣•••🌸•••💛•••🌻•••🟥

سوال: کیا عورت اعتکاف میں بیٹھنے کے لیے حیض کو روکنے کے لیے دوا (مانع حیض گولیاں) کھا سکتی ہے؟🔴°°°°°°°❣️
جواب: عورت اعتکاف میں بیٹھنے کے واسطے حیض کو روکنے کے لیے دوا (یعنی مانع حیض گولیاں) کھا سکتی ہے۔ مگر حیض روکنے والی دوا نہیں کھانی چاہیے کیونکہ یہ صحت کے لیے نقصان دہ ہے۔(از فتاویٰ اہلسنت)*
💟°°°°°°💟°°°°°°💟

سوال: اگر عورت کو حیض آجائے تو کیا اس کا اعتکاف ٹوٹ جائے گا؟🦚
جواب: اگر عورت کو حیض آجائے تو اس کا اعتکاف ٹوٹ جائے گا کیونکہ عورت کے اعتکاف کے لیے ضروری ہے کہ وہ حیض سے پاک ہو۔(فتاویٰ عالمگیری)🌹

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں