30

عورت کتنی جگہ کو مسجدِ بیت قرار دے سکتی ہے؟ کیا سنتِ اعتکاف کے لیے عورت کو اپنے شوہر سے اجازت لینا ضروری ہے؟

سوال: کیا عورت اعتکاف کے دوران مسجدِ بیت میں بیڈ یا چارپائی پر آرام کر سکتی ہے؟❄️
جواب: اگر عورت نے اتنی جگہ کو مسجد بیت قرار دیا ہو جہاں پر بیڈ اور چارپائی آسانی سے آ سکتے ہوں اور نماز کی ادائیگی بھی کر سکتی ہو تو وہ اعتکاف کے دوران بیڈ یا چارپائی پر آرام کر سکتی ہے۔(دارالافتاء فیضان شریعت)🔵🎆🔵

سوال: عورت کتنی جگہ کو مسجدِ بیت قرار دے سکتی ہے؟🌸::::::🟪
جواب: اس کے لیے جگہ کی کوئی پابندی نہیں ہے بلکہ چاہے تو پورے کمرے کو بھی مسجدِ بیت قرار دے سکتی ہے اور کم از کم اتنی جگہ کو مسجدِ بیت قرار دے کہ جہاں وہ آرام کر سکے اور نماز وغیرہ ادا کر سکے۔(از دارالافتاء فیضان شریعت)🟣•••••🌸💞

سوال: کیا سنتِ اعتکاف کے لیے عورت کو اپنے شوہر سے اجازت لینا ضروری ہے؟💦❄️
جواب: سنت اعتکاف کے لیے عورت کو اپنے شوہر سے اجازت لینا ضروری ہے۔اور شوہر چاہے تو اس کو سنت اعتکاف سے روک بھی سکتا ہے، البتہ ایک بار اجازت دے دی تو پھر روکنے کا اختیار اسے باقی نہیں رہے گا۔(فتاویٰ عالمگیری)🎆:::::::💜:::::::🎆

سوال: اگر کسی عورت کا شوہر بیرون ملک گیا ہو تو کیا پھر بھی اسے شوہر سے اجازت لینا ضروری ہے؟🧡
جواب: اگر کسی عورت کا شوہر بیرون ملک گیا ہوا ہو اور عورت کے پاس موجود نہ ہو تو اعتکاف کے لیے اسے شوہر سے اجازت لینا ضروری نہیں ہے۔(بحرالرائق)⭐

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں